• August 10, 2020

خیبرپختونخوا میں لاکھوں والدین کا انسدادپولیو مہم کے دور ان بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے انکار

پشاور/ کوئٹہ(ہم صفیر نیوز) خیبرپختونخوا میں لاکھوں والدین نے انسدادپولیو مہم کے دور ان بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے انکار کر دیا۔محکمہ صحت کے اعدادوشمار کے مطابق اب تک صوبے میں 79 پولیو کیسز سامنے آچکے ہیں جن میں اس سال کے اختتام تک مزید اضافے کا خدشہ ہے۔ذرائع کے مطابق رواں سال صوبے میں 10 لاکھ 89 ہزار87 والدین نے اپنے بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلانے سے انکار کردیا جنھیں رپورٹ کیا گیا ہے۔محکمہ صحت کی دستاویزات کے مطابق اپریل میں سب سے زیادہ 6 لاکھ 94 ہزار 984 ویکسین سے انکاری کیسز سامنے ا?ئے۔ اس حوالے سے محکمہ صحت کے اعلی افسر کا کہنا ہے کہ ماشوخیل واقعہ میں بے بنیاد منفی پروپیگنڈے نے پولیو پروگرام کو شدید دھچکا پہنچایا۔پولیو ویکسین کے خلاف منفی پروپیگنڈے سے نمٹنے کے لیے محکمہ صحت نے باعث ایک بار پھر علما کرام اور اسکالرز سے تعاون مانگ لیا ہے۔یاد مرہے کہ مذہبی سکالر مولانا طارق جمیل بھی مہم کے حق میں فتویٰ دے چکے ہیں متعلقہ علاقوں میں سیاسی رہنماؤں نے اپنے بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلا کر مہم کا آغاز کیا

Read Previous

کشمیر معاملے پر عالمی کانفرنس بلانا چاہتے تھے، مولانا فضل الرحمن کے دھرنے کی وجہ سے نہ کر سکے،سراج الحق

Read Next

ڈپٹی ڈائریکٹر ایف آئی اے اسلام آباد ایئرپورٹ نے امیگریشن سٹاف کے لیے ہدایات جاری کردیں